Breaking News

Ghazal By Zubyr Qaisar

تیری تصویر سب چراغوں پر
رکھ دیے میں نے لب چراغوں پر
۔۔۔
گھر کے سناٹے چیخ اٹھتے ہیں
اشک گرتے ہیں جب چراغوں پر
۔۔۔
خواب جاگے ہیں جانے کب میرے ؟
نیند اتری ہے کب چراغوں پر ؟
۔۔۔
آگ جیسے کوئی بھڑک رہی ہے
ایک وحشت ہے سب چراغوں پر
۔۔۔
میں اندھیرے کو کر رہا تھا خوش
چیخ کر بے سبب چراغوں پر
۔۔۔
صبح ہونا ہی چاہتی ہے زبیر
وقت مشکل ہے اب چراغوں پر
۔۔۔
۔۔۔۔۔۔ زبیر قیصر

About meharafroz

Check Also

Short Story By Hamid Siraj

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *