Breaking News

Ghazal By Diya Gem

تمہارے پیار کا دریا ہی استعارہ تھا
ہماری ناؤ تھی اور عشق کا کنارا تھا

تمہارا نام لبوں پر نہ جانے کیوں آیا
کسی خیال میں پھولوں کو جب پکارا تھا

پھر اس کے بعد تو سارے اجالے ختم ہوئے
کہ اس کی آنکھ میں روشن وہی ستارہ تھا

میں جیت جاؤں اسے ، بس یہی تمنا تھی
مجھے ہی دیکھ کے بازی وہ اپنی ہارا تھا

جب اس نے پھول کو چوما تھا اپنے ہونٹوں سے
سمے کی آنکھ میں ابتک وہی نظارہ تھا

تمہاری یاد سے آباد تھا یہ دل کا کھنڈر
امید کا یہ دیاؔ آخری سہارا تھا
دیا جیم

About iliyas

Online Drugstore, buy baclofen online, Free shipping, buy Lexapro online, Discount 10% in Cheap Pharmacy Online Without a Prescription

Check Also

Taziyati Ijlas For Raof Khushtar

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Online Drugstore, buy lamisil online, Free shipping, buy keppra online, Discount 10% in Cheap Pharmacy Online Without a Prescription