Breaking News

Ghazal By Parvez Akhtar

آ گیا ہوں کسی کی آئی میں
ہے برائی بہت بھلائی میں
اپنا سب کچھ لٹا کے بیٹھ گئے
آپسی زور آزمائی میں

کچھ تو برباد ہیں گناہوں سے
اور کچھ زعمِ پارسائی میں
کیسی کم بخت آندھیاں آئیں
میری دنیا بسی، بسائی میں
بانٹنے آ، متاعِ رنج و الم
تیرا حصہ بھی ہے کمائی میں

خیر سے میں تو ہوں ہی دیوانہ
تو سلامت رہے جدائی میں
میری حالت سدھرتی جاتی ہے
زہر شامل تھا کچھ دوائی میں

About iliyas

Check Also

Shamoil Ahmed Short Story

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *