Breaking News

Article on Sir Syed Ahmed Khan…A legend

#سر_سید_احمد_خاں_کا__یوم_ولادت

ہزاروں سال نرگس اپنی بے نوری پہ روتی ہے،
بڑی مشکل سے ہوتا ہے چمن میں دیدہ ور پیدا

17؍ اکتوبر1817 کویہ عظیم شخصیت دنیائے آب وگل میں آئی،اور 29؍مارچ 1898ء کو داعی اجل کو لبیک کہا،اس طرح ۸۱؍سال کی عمر میں انھوں نے وہ کارنامے انجام دئے کہ عقل دنگ رہ جاتی ہے ان کی زندگی کے کسی گوشہ پر جتنا لکھا،پڑھا،یاکہاجائے وہ کم ہے، دراصل اس عظیم و عبقری شخصیت کو کسی ایک سمت یاایک پہلومیں محدود نہیں کیاجاسکتا، وہ ماہر تعلیم،ماہر قانون، ماہر دینیات ،بیدارمغز ، حقیقت پسندانہ مزاج ،صحافی،مصنف، ادیب، سیرت نگار، تاریخ ساز کے مالک ہونے کے ساتھ ایک مصلح قوم،ایک ملت،ایک مسیحانفس ہونے کے علاوہ متعدد خصوصیت کے حامل تھے ، ان میں آدم گری کا حوصلہ بھی تھا،اور شیشہ گری کی صلاحیت بھی۔

آج ہمارا ملک دہشت گردی، فرقہ پرستی، ذات، مذہب کے اونچ نیچ سے پریشان ہے، آزادی کے 71 ؍سال بعد بھی ملک کی عوام غریبی، جہالت، خوف، بھوک، ناانصافی اورظلم و زیادتی جھیل رہی ہے، اس سے زیادہ سنگین صورت حال مغل حکومت کے زوال اور انگریزی حکومت کے آغاز پر تھی، سابقہ دو صدیوں کا جب ہم جائزہ لیتے ہیں توموجودہ صورت حال سے مقابلہ آرائی کے لئے صرف ایک نام ابھر کر سامنے آتا ہے جس کو ہم سب سر سید احمد خاں کے نام سے یاد کرتے ہیں جو عظیم مصلح قوم، ادیب اور تعلیمی رہنما اور مفکر کے طور پر پوری دنیا میں مشہور ہیں، انھوں نے ایک ساتھ کئی شعبوں میں کام کئے، تعلیم، ادب، باہمی امداد اور قوم کی اصلاح کا بیڑہ اٹھایا، بہت سی پریشانیوں کو برداشت کیا، سر سید احمد خاں صرف مسلمانوں کے ہی طرف دار نہیں تھے بلکہ پورے ہندوستانی سماج کے لئے ہمیشہ متفکر رہے، ان کے کام اور فکرکا رشتہ آج بھی سبھی ذات، مذہب اور فرقے کے پیروکار وں سے جڑا ہوا ہے۔

انیسویں صدی میں سر سید احمد خاں نے افکارو نظریات، دور اندیشی، تصنیف و تالیف اور تعلیم کے شعبہ میں کئے گئے اپنے قیمتی تر کاموں سے اپنے نام کو تاریخ کے صفحات میں درج کرالیا ہے، ان کی ابتدائی تعلیم والدہ کی سرپرستی میں شروع ہوئی، قرآن مجید کی تعلیم پوری کرنے کے بعد مکتب میں پڑھنے لگے، ابتدائی تعلیم کی تکمیل کے بعد عربی، فارسی اور ریاضی وغیرہ کی تعلیم حاصل کی، فن طب میں دلچسپی پیدا ہوئی تو حکیم غلام حیدر کے سامنے زانوئے تلمذ تہ کیا، مطالعہ میں خاص دلچسپی ہونے کی وجہ سے کتابوں میں ڈوبے رہتے، مشہور شاعر مرزا غالب، آزردہ اور صہبائی وغیرہ کی محفلوں میں بیٹھ کر بہت کچھ سیکھا۔

1838میں ان کے والد ماجد اللہ کو پیارے ہوگئے تو اس وقت سر سید احمد خاں کی عمر صرف 21سال کی تھی، والد صاحب کے انتقال کے بعد حاکم وقت کی طرف سے ملنے والا وظیفہ بھی کم کردیا گیا، کچھ رقم والدہ کو ملتی تھی اس لئے سر سید احمد خاں نے سرکاری نوکری حاصل کرنے کا فیصلہ کرلیا، اس وقت ان کے خالو خلیل اللہ خان دہلی میں صدر امین تھے، ان سے درخواست کرکے کچہری میں کام سیکھنا شروع کردیا، اس کے بعد رابرٹ ہیملٹن کے ساتھ 1839میں کمشنری کے دفتر میں منشی کے عہدہ پر ان کی تقرری ہوئی۔

دسمبر 1841میں مین پوری کے منصف مقرر ہوئے، 1842میں ٹرانسفر ہوکر فتح پور سکری آگئے جہاں انھیں اکبر بادشاہ کے آرام کمرہ میں رہنے کا موقع ملا۔18فروری 1846کو سر سید دوبارہ دہلی آگئے، اس دوران انھوں نے آثار الصنادید نام کی کتاب تصنیف کی، 1855میں صدر امین مقرر ہوکر دہلی سے بجنور چلے گئے، یہاں قریب سوا دو سال اقامت پذیر رہے، اسی درمیان غدر یعنی پہلی جنگ آزادی چھڑ گئی۔

سر سید احمد خاں نے مرادآباد میں قیام کے دوران ’’اسباب بغاوت ہند ‘‘ تحریر کی جس میں 1857کے غدر کو ایسٹ انڈیا کمپنی کی غلط پالیسی، انگریزحکومت کے ذریعہ ہندوستانیوں کو نظر انداز کرنے، عوامی مسائل میں دلچسپی نہ لینے، مذہبی معاملات میں پادریوں کو جری بنانے جیسے اہم اسباب کا نتیجہ قرار دیا،اپریل 1869میں سر سید احمد خاں نے اپنے لڑکے کے ساتھ انگلینڈ کا سفر کیا۔ ایک اور سر سید تحریک کی ضرورت ہے

اگر محمڈن اینگلو اورینٹل(MAO) کالج علی گڑھ کو انیسویں صدی کا تحفہ کہا جائے تو مبالغہ بالکل نہ ہوگا جس کو سر سید احمد خاں نے اپنے خون پیسنے سے سینچا، اپنی زندگی کے آخری پیش قیمتی 30سال MAO کالج کی ترقی اورسر بلندی میں گزار دئے، اس طرح اس کو 1920میں یونی ورسٹی کا درجہ ملا اور سر سید احمد خاں کا خواب شرمندہ تعبیر ہوگیا۔ آج تعلیم نے تجارت کا لبادہ اوڑھ لیا ہے، تعلیم گاہیں اور دانش گاہیں تجارتی منڈی بن کر رہ گئی ہیں، تعلیم عام لوگوں کی پہنچ سے دور ہوتی جارہی ہے، آج ملک کو دوبارہ ایک اور سرسید احمد خان کی تحریک کی ضرورت ہے۔

17اکتوبر 2017کو ملک و بیرون ملک میں پھیلے سر سید احمد خاں کے عقیدت مندان کا دو سوسالہ یوم ولادت منانے کی تیاری میں مصروف ہیں اس موقع پر سبھی لوگ یہ عہد و پیمان کریں کہ سر سید احمد خاں کی تحریک کو ملک کے ہر گوشے میں جاری کرکے ہی دم لیں گے، آج ملک کے ہر صوبے کو سر سید احمد خاں کی ضرورت ہے، ان کے مشن کو آگے لے جانے کی ضرورت ہے، ان کے افکار و نظریات، عظیم کام اور کارنامے آج بھی ہم سے پوری طرح مربوط و وابستہ ہیں۔

محمڈن ایجوکیشنل کانگریس کا قیام سر سید احمد خاں نے تعلیم کی ترویج و اشاعت کے لئے محمڈن ایجوکیشنل کانگریس کی بنیاد ڈالی جو بعد میں آل انڈیا مسلم ایجوکیشنل کانفرنس کے نام سے مشہور ہوئی، آج اسی کانفرنس کو پھر ملک، صوبہ، ڈویزن اور ضلع سطح پر قائم کرکے پسماندہ علاقوں کی پہچان کرنے کی ضرورت ہے، MAO ماڈل اسکول اور کالج کے قیام، ہاسٹل، ہاسپٹل، دارالمطالعہ اور کوچنگ سنٹر کے قیام، اسی طرح تعلیم نسواں کو فروغ دینے کی حد درجہ ضرورت ہے، اگر ہم سابقہ سو سالوں کا مطالعہ کریں تو AMU کا کوئی متبادل دکھائی نہیں دیتا، آج بھی تعلیم کے شعبہ میں پیچھے رہ جانے والے صوبے، ڈویزن اور اضلاع MAO ماڈل کالج کے لئے ترس رہے ہیں۔ یونی ورسٹی کے نام سے کئی صوبوں میں زمین وقف کی گئی ہے، وہاں اس کام کو آسانی کے ساتھ پورا کیا جاسکتا ہے، ملک اور دنیا بھر میں پھیلے AMUکے فارغ التحصیل طلبہکا حق بنتا ہے کہ سر سید احمد خاں کے مشن کو حقیقت میں تبدیل کریں اور اسے رفتار فراہم کریں۔.

سر سید احمد خاں ایک مشہور قلم کار و مضمون نویس

سر سید احمد خاں ایک مشہور قلم کار تھے، ان کی کوشش سے ملک و بیرون ملک کی مختلف زبانوں کے ترجموں کے لئے 1864میں غازی پور میں سائنٹفک سوسائٹی کا قیام عمل میں آیا، اس کے ذریعہ ملک میں جدید تعلیم کی نشرو اشاعت کا بیڑہ اٹھایا، سر سید احمد خاں مسلمانوں کی تباہی، بربادی اور انحطاط دیکھ کر فکر مند ہوگئے، بہت غور و خوض کے بعد اس نتیجہ پر پہنچے کہ اس مسئلہ کا حل صرف اور صرف جدید تعلیم میں ہے، جہالت ہی ہماری تنزلی اور محرومی کا سب سے بڑا سبب ہے، تعلیم سے دوری ہی تمام برائیوں کی جڑ اور بنیاد ہے، اس لئے سر سید احمد خاں نے یہ تاریخی فیصلہ کیا اور اپنا کتب خانہ فروخت کردیا، گھر اور کوٹھی کو رہن کے طور پر رکھ دیا اور یکم اپریل 1869کو انگلینڈ چلے گئے، وہیں پر انھوں نے منصوبہ تیار کیا، ہندوستان میں جاری طریقہ تعلیم کے خلاف ایک کتابچہ شائع کیا، ان کا مقصد ایک مسلم یونی ورسٹی قائم کرنا تھا، انگلینڈ سے واپسی کے بعد انھوں نے دو اہم کارنامے انجام دئے، تہذیب الاخلاق اردو رسالہ شائع کرنا شروع کیا جس کا مقصد مذہبی افکار ونظریات اورسماجی و ثقافتی شعبوں میں اصلاح کرنا تھااور اردو ادب کو اس قابل بنانا تھا کہ ملک کی دیگر زبانوں کے سامنے وہ نمایاں مقام حاصل کرسکے۔

سر سید احمد خاں کا دوسرا سب سے بڑا مقصد

دوسرا سب سے بڑا مقصد محمڈن اینگلو اورینٹل کالج کا قیام تھا جو اپنے وقت کا پہلا اقامتی کالج تھا، اس کالج نے قوم میں نئی تعلیمی بیداری پیدا کی، سر سید کے جیتے جی یونی ورسٹی کا خواب تو شرمندہ تعبیر نہ ہوسکا کیوں کہ حکومت وقت نے ساتھ نہیں دیا لیکن ان کے انتقال کے بعد ان کا خواب پورا ہوگیااور MAO کالج 1920میں مسلم یونی ورسٹی علی گڑھ کے نام سے پوری دنیا میں متعارف ہوا، جس نے ملک میں اپنا اولین مقام بھی حاصل کیا، سر سید احمد خاں کے انتقال کو ایک صدی سے بھی زیادہ عرصہ بیت گیا لیکن ان کا بدل ہندوستان کو میسر نہیں ہوسکا۔ سر سید احمد خاں نے ایک اجلاس میں طلبہ کو خطاب کرتے ہوئے کہا تھا جس کی اہمیت آج بھی مسلم ہے کہ ’’ اگر تم اپنے دین پر قائم نہ رہے اور سب کچھ ہوگئے اور اگر آسمان کے تارے ہوکر چمکے تو کیا ؟ تم ہم میں سے نہ رہے، میں چاہتا ہوں کہ تمہارے ایک ہاتھ میں قرآن ہو اور دوسرے میں علوم جدیدہ ہوں اور سر پر لا الہ الا اللہ کا تاج ہو۔

راج موہن گاندھی نے سر سید احمد خاں کی پرورش میں ان کی والدہ عزیز النساء کے کردار کو سراہتے ہوئے لکھا ہے کہ ایک بار سید احمد خاں کو ایک شخص نے دکھ پہونچایا، وہ بدلہ لینے کے لئے بضد تھے، ان کی والدہ نے ہدایت کی کہ وہ اسے معاف کردیں اور آخر میں سر سید احمد خاں کو معاف کرنا ہی پڑا، ایک مرتبہ بچپن میں سید احمد خاں نے ایک عمر رسیدہ خادم کو ایک تھپڑ رسید کردیا، جب ان کی والدہ کو اس کا علم ہوا تو انھوں نے کہا کہ یہ لڑکا اس گھر میں رہنے کے لائق نہیں، فورا گھر سے باہر نکال دیا جائے، جب تک یہ نوکر سے باقاعدہ معافی نہ مانگ لے اور نوکر اسے معاف نہ کردے تب تک اس کا داخلہ گھر میں ممنوع ہے، ایسی سخت نگہداشت اور نگرانی میں ہوئی سر سید احمد خاں کی پرورش و پرداخت۔

سر سید احمد خاں کا پیغام قوم کے نام

اے میری قوم کے لوگو!

اپنے عزیز اور پیارے بچوں کو غارت نہ کرو، ان کی پرورش کرو، ان کی آئندہ زندگی اچھی طرح بسر ہونے کا سامان کرو، مجھ کو تم کچھ بھی کہو، میری بات سنو یا نہ سنو، مگر یاد رکھو کہ اگر تم ایک قومی تعلیم کے طور پر ان کو تعلیم نہ دو گے تو وہ آوارہ اور خراب ہوں گے، تم ان کے ابتر حالات کو دیکھوگے اور بے چین ہوگے، رؤگے اور کچھ نہ کرسکوگے، تم اگر مر جاؤگے تو اپنی اولاد کی خراب زندگی دیکھ کر تمہاری روحیں قبروں میں تڑپیں گی اور تم سے کچھ نہ ہوسکے گا، ابھی وقت ہے اور تم سب کچھ کرسکتے ہو مگر یاد رکھو کہ میں یہ پیش گوئی کرتا ہوں کہ اگر چند روز تم اسی طرح غافل رہے تو ایک زمانہ ایسا آئے گا کہ تم چاہوگے کہ اپنے بچوں کو تعلیم دو، ان کی تربیت کرو مگر تم سے کچھ نہ ہوسکے گا، مجھ کو کچھ کہو، کافر، ملحد، نیچری، مگر تم سے خدا کے سامنے کچھ سفارش نہیں چاہتا، میں تم سے اپنی شفاعت کے واسطے خواست گار نہ ہوں گا، میں جو کچھ کہتا ہوں تمہارے بچوں کی بہتری کے لئے کہتا ہوں، تم ان پر رحم کرو اور ایسا کچھ کرو کہ آئندہ کو پچھتانا نہ پڑے، (سر سید احمد خاں لیکچر مقام لدھیانہ ۲۳؍ جنوری 1883ء )

About Mehar Afroz

Check Also

Naat by Riyaz Ahmed khumar

74 comments

  1. It’s going to be finish of mine day, but before ending I
    am reading this impressive paragraph to
    improve my knowledge.

  2. Hmm is anyone else experiencing problems with the pictures on this blog loading?
    I’m trying to determine if its a problem on my end or if it’s the blog.
    Any responses would be greatly appreciated.

  3. Nice respond in return of this difficulty with solid
    arguments and explaining all concerning that.

  4. There are no words to show my appreciation!

  5. I’m grateful for having you as a friend!

  6. Thank you from the bottom of my heart for everything

  7. Since the admin of this web page is working, no uncertainty very soon it will be well-known, due to its quality contents.

  8. I think the admin of this web site is really working hard in support of his web page, because here every data is quality based
    data.

  9. Thanks for finally talking about >Article on Sir Syed Ahmed Khan…A legend – Huda Foundation <Liked it!

  10. bookmarked!!, I like your website!

  11. It’s an awesome article designed for all the web viewers; they will obtain advantage from it
    I am sure.

  12. Hi, i think that i saw you visited my blog thus i
    came to “return the favor”.I’m attempting to
    find things to improve my website!I suppose its ok to use some of your ideas!!

  13. fantastic submit, very informative. I’m wondering why the opposite specialists of
    this sector do not notice this. You should proceed
    your writing. I am sure, you’ve a huge readers’ base already!

  14. Greetings! I know this is somewhat off topic but I was wondering if you knew where I could locate a captcha plugin for
    my comment form? I’m using the same blog platform as yours and I’m having problems finding one?
    Thanks a lot!

  15. Greetings from Carolina! I’m bored at work
    so I decided to browse your website on my iphone during lunch break.
    I love the knowledge you provide here and can’t wait to take a look when I get home.
    I’m surprised at how fast your blog loaded on my cell phone ..

    I’m not even using WIFI, just 3G .. Anyhow, good site!

  16. I am not sure the place you are getting your info,
    however good topic. I needs to spend a while learning much more
    or working out more. Thank you for great information I was searching for this information for my mission.

  17. Saved as a favorite, I like your website!

  18. Greetings from Colorado! I’m bored at work so I decided to browse your blog on my iphone during lunch break.
    I enjoy the information you present here and can’t wait to
    take a look when I get home. I’m amazed at how fast your blog loaded on my
    cell phone .. I’m not even using WIFI, just 3G .. Anyways, very good blog!

  19. Cialis Levitra Yahoo Buy Cialis Cialis Propecia O Viagra Nolvadex Research Products For Sale Ciprofloxacin 127

  20. Hi, I do believe this is a great web site. I stumbledupon it 😉 I
    will revisit yet again since i have bookmarked it. Money and freedom is the best way to change, may you
    be rich and continue to guide other people.

  21. I know this if off topic but I’m looking into starting my own weblog and was curious
    what all is needed to get setup? I’m assuming having a blog like yours would cost
    a pretty penny? I’m not very web smart so I’m not 100% certain. Any tips or advice would be greatly appreciated.
    Thank you

  22. Articles created by an expert. It is great to visit your website. I school a lot of knowledge here.

  23. Hey there this is kinda of off topic but I was wondering if blogs use WYSIWYG editors or if you have to manually code with HTML. I’m starting a blog soon but have no coding know-how so I wanted to get guidance from someone with experience. Any help would be greatly appreciated.

  24. I simply just could not get away from your blog without making a remark on the standard of your posts and the quantity of facts you deliver to your visitors. Will be returning back regularly to take a look at what other wonderful info you’ve got up your sleeves.

  25. There’s still a lot to understand concerning this issue. Nonetheless, you’ve truly done a fantastic job with the manner you have communicated your ideas. Keep up the excellent work.

  26. Greetings, I noticed your comment on my small blog and wanted to look you up. You certainly have got something very good going on here. Now I am encouraged to discover ways to enhance my website and I am certain that getting a style and design idea or two coming from your own could well be a very good kick off point. Many thanks.

  27. Hola, tengo que decir que no intentaría esto. No me gusta el MLM y este tipo de venta. Revisé su sitio web y aunque podría pasar como legítimo, no lo estoy comprando. Estoy de acuerdo con lo que dijiste sobre el dueño que está vendiendo esto, no habría razón para ello si estuviera satisfecho. Además, su sitio es realmente básico… no quiero ser grosero… pero si tuvieran dinero, podrían arreglarlo mejor. Es un sitio de una página y sólo cambiaron el texto en el tema y pusieron algunas imágenes, que entretanto no parecen tan convincentes. Las fotos de los propietarios son borrosas, cuando quiero hacer clic y ver más sobre ellos, no hay tal opción. Es simplemente sospechoso. Gracias por este post, no lo intentaría, pero es bueno que lo escribieras y que lo revisaras para otros que lo harían. Saludos, Strahinja.

  28. ¡Hola! Gracias por este recurso que me muestra cómo añadir YouTube a mi negocio. He estado trabajando en la creación de más videos y me ha ayudado mucho. Estoy de acuerdo en que el entrenamiento de Jay es muy bueno. También es claro y fácil de seguir. ¿Tienes un enlace a este vídeo? Parece que no lo encuentro al final de este post. Gracias, Marlinda.

  29. Thanks for the article

  30. Thank you for doing the test! Shame it’s not the exact same issue as the 640. I for context on why I think the Android capability is more useful for me than just a tablet, I’m a tattoo apprentice and it’s easier to draw and upload designs straight to Instagram and blogs when I conceive them, and carrying a screened basic tablet around doesn’t have its own internet (I’d have to hotspot on my phone or cafe wifi it), or give me the detail I need through the apps I’ve tried. Graphics tablets mean I’d also need a laptop and again more internet. I also think something not Apple would be best as I have nothing else Apple, don’t know how the OS works, don’t know about apps, and I can get a graphics tablet and Photoshop for a whole year the same price. I’d ideally like to have a perfect pressure curve for drawing stencils and being able to send them straight to the stencil printer without having inconsistencies in line weight.I will investigate Clip Studio Paint, thanks for the tip off. Thanks ever so much with trying GIMP and letting me know about set up, I’ll see if I can find the buttons for it.I think I will invest in the hs610 if I’m sold on Clip Studio Paint or figure out how to make GIMP like graphics tablets. If I can manually toggle pressure on and off I should be able to manage between neotrad digital concept pieces and negative space dotwork stencils. Thanks so much for your help! -Chuck ❤️ feedback”>Like

  31. Heya are using WordPress for your site platform? I’m new to the blog world but I’m trying to get started and create my own. Do you require any html coding expertise to make your own blog? Any help would be really appreciated!|

  32. Spot on with this write-up, I absolutely think this site needs a lot more attention. I’ll probably be returning to see more, thanks for the info!|

  33. Hey There. I found your blog using msn. This is a really well written article. I’ll be sure to bookmark it and return to read more of your useful info. Thanks for the post. I’ll certainly comeback.|

  34. Hi! I know this is kinda off topic however , I’d figured I’d ask. Would you be interested in exchanging links or maybe guest authoring a blog post or vice-versa? My site goes over a lot of the same subjects as yours and I think we could greatly benefit from each other. If you might be interested feel free to send me an email. I look forward to hearing from you! Wonderful blog by the way!|

  35. You’ve made some good points there. I checked on the web to learn more about the issue and found most individuals will go along with your views on this web site.|

  36. You should be a part of a contest for one of the greatest websites on the web. I am going to highly recommend this site!|

  37. i bookmared your site

  38. Thanks designed for sharing such a nice thinking, piece of writing is pleasant, thats why i have read it fully|

  39. Hmm is anyone else having problems with the images on this blog loading? I’m trying to find out if its a problem on my end or if it’s the blog. Any responses would be greatly appreciated.|

  40. Wow, incredible blog layout! How long have you been blogging for? you made blogging look easy. The overall look of your web site is great, as well as the content!|

  41. Howdy! I realize this is somewhat off-topic but I had to ask. Does managing a well-established website such as yours require a lot of work? I’m completely new to blogging however I do write in my diary daily. I’d like to start a blog so I will be able to share my own experience and thoughts online. Please let me know if you have any recommendations or tips for new aspiring bloggers. Thankyou!|

  42. Nice post. I used to be checking constantly this blog and I am inspired! Very helpful info particularly the last phase 🙂 I take care of such information much. I used to be seeking this particular information for a very lengthy time. Thank you and best of luck. |

  43. I am no longer sure where you are getting your information, however good topic. I must spend some time studying more or working out more. Thank you for wonderful info I used to be searching for this information for my mission.|

  44. Pretty! This was an extremely wonderful post. Thank you for providing this info.|

  45. Greetings! Very useful advice within this article! It is the little changes that produce the most significant changes. Thanks for sharing!|

  46. Wow! After all I got a weblog from where I be able to genuinely obtain valuable information concerning my study and knowledge.|

  47. This is very interesting, You are an excessively professional blogger. I have joined your rss feed and look ahead to searching for extra of your excellent post. Also, I have shared your web site in my social networks|

  48. Magnificent beat ! I wish to apprentice while you amend your web site, how can i subscribe for a blog website? The account aided me a acceptable deal. I had been tiny bit acquainted of this your broadcast provided vivid transparent concept|

  49. That is really attention-grabbing, You are an overly professional blogger. I have joined your feed and stay up for in quest of extra of your wonderful post. Also, I’ve shared your website in my social networks|

  50. My coder is trying to persuade me to move to .net from PHP. I have always disliked the idea because of the expenses. But he’s tryiong none the less. I’ve been using Movable-type on a number of websites for about a year and am nervous about switching to another platform. I have heard very good things about blogengine.net. Is there a way I can import all my wordpress posts into it? Any help would be really appreciated!|

  51. I was able to find good information from your content.|

  52. Hi, i read your blog from time to time and i own a similar one and i was just wondering if you get a lot of spam remarks? If so how do you protect against it, any plugin or anything you can recommend? I get so much lately it’s driving me insane so any help is very much appreciated.|

  53. It’s nearly impossible to find experienced people on this topic, however, you seem like you know what you’re talking about! Thanks|

  54. Hello there! I just would like to offer you a huge thumbs up for your great information you have got right here on this post. I’ll be returning to your web site for more soon.|

  55. If you are going for finest contents like myself, just visit this site all the time as it gives feature contents, thanks|

  56. Do you mind if I quote a few of your posts as long as I provide credit and sources back to your webpage? My blog is in the exact same area of interest as yours and my users would certainly benefit from a lot of the information you provide here. Please let me know if this ok with you. Thanks a lot!|

  57. Hi to every single one, it’s in fact a pleasant for me to visit this website, it contains useful Information.|

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *