Breaking News

Ghazal By Paras Mazari

ترا غرور عبث انتہائ سطح پہ ہے
بلندی پر بھی وہی ہے جو کھائ سطح پہ ہے

zoloft for sale, generic Zoloft.

پھلانگ سکتا ہوں جتنا ہے دو دلوں کے بیچ
مگر جو فاصلہ جغرافیائ سطح پہ ہے

یہ کس ہنر سے کیا تم نے خود کو سیر اے دوست
کہ دودھ پی بھی لیا اور ملائ سطح پہ ہے

مجھے نہیں ہے ذرا رنج تہہ نشینی کا
مجھے خوشی ہے چلو میرا بھائ سطح پہ ہے

ہم ایسے دیکھنے والوں کا کوئ دوش نہیں
کہ زیرِ سطح کثافت ، صفائ سطح پہ ہے

پارس مزاری

About Mehar Afroz

Check Also

Short Story By Musharraf Alam Zauqui

کاتیائن بہنیں – مشرف عالم ذوقی – ایک ضروری نوٹ قارئین! کچھ کہانیاں ایسی ہوتی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *