Breaking News

Ghazal By Siddique Warsi

ایک کی فرمائش پر تازہ غزل احباب کے ذوق کی نذر
***********

حسنِ جاناں کے گرفتار میسّر نہ ہوئے
حسن والوں کو پرستار میسّر نہ ہوئے

فصل گر ہوگئی تیار غریبوں کی کبھی
ان کو منڈی میں خریدار میسّر نہ ہوئے

دل کے ویران جزیرے کو جو آباد کریں
وہ حسیں سیرت و کردار میسّر نہ ہوئے

قیمتِ زیست پہ ہم نے تو نبھائی ہے وفا
لیک بدلے میں وفادار میسّر نہ ہوئے

قیمتِ زیست پہ جس نے بھی نبھائی ہے وفا
اس کو دنیا میں وفادار میسّر نہ ہوئے

بے گناہوں کو سزا دیتے رہے منصفِ وقت
جب گنہگار ؛ خطا کار میسّر نہ ہوئے

گھر کی بربادی کا ماتم ہی کرے گا وہ غریب
وقتِ مشکل جسے معمار میسّر نہ ہوئے

دردِ دل کس کو سنائیں یہاں وہ وارثی جی
جن کو یاں مونس و غم خوار میسّر نہ ہوئے

صدیق وارثی

About aseem khazi khazi

Check Also

Dr Maqsood hassani no more

Short Story By Dr Maqsood Hassani

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *